chat
Ask Fund Manager
Sending

کمپنی پروفائل

ایم سی بی عارف حبیب سیونگز اینڈ انویسٹمنٹ (MCB-AH) ایک ایسیٹ مینجمنٹ کمپنی ہے جو ایم سی بینک کا ذیلی ادارہ ہے۔ ایم سی بی عارف حبیب اپنے 75000 کسٹمرز کے 96.56 بلین روپے (نومبر ، 2019 تک) کی دیکھ بھال کررہا ہے۔ ہمارے کسٹمرز کی وسیع رینج میں افراد، ٹرسٹس، پینشن فنڈز، پروایڈینٹ فنڈز، کمپنیزاور حتیٰ کہ پبلک سیکٹر ادارے بھی شامل ہیں۔ کمپنی کی PACRA ریٹنگ AM2++ہے۔
ایم سی بی عارف حبیب کے زیرِ انتظام پروڈکٹ پورٹ فولیو میں 15میوچل فنڈز، 2والینٹری پنشن اسکیمز اور مختلف انویسٹمنٹ پلانر ہیں جو کسٹرز کی بڑھتی ہوئی تعداد کی انویسٹمنٹ ضروریات کو پورا کررہے ہیں۔ کمپنی کا قیام سال 2000میں عمل آیا اور مارچ 2002میں کمپنی کے 2پرچم بردار فنڈز، دی ایم سی بی پاکستان اسٹاک مارکیٹ فنڈز (ایم سی بی ۔ پی ایس ایم) اور پاکستان انکم فنڈ (پی آئی ایف) لانچ کئے گئے۔
ایم سی بھی عارف حبیب سیونگز اینڈ انویسٹمنٹس لمیٹڈ ، پاکستان اسٹاک ایکسچینج کی لِسٹڈ(LISTED)کمپنی ہے۔ نان بینکنگ فنانس کمپنیز (اسٹبلشمنٹ اینڈ ریگولیشن) رولز 2003نان بینکنگ فنانس کمپنی اور نوٹیفیائیڈ اینٹیٹیز ریگولیشنز2008اور والنٹری پنشن سسٹم رولز 2005کے تحت سیکوریٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) اس کی ریگولیٹری باڈی ہے اور کمپنی کے پاس ایسٹ مینجمنٹ، انویسٹمنٹ ایڈوائزری، پنشن فنڈ مینجمنٹ کمپنی کے لائسنس ہیں جس کے تحت کمپنی، اوپن اینڈ میوچل فنڈس اور پنشن فنڈز کی دکھ بھال کررہی ہے۔ ایم سی بی عارف حبیب سیونگز اینڈ انویسٹمنٹس لمیٹڈ، میوچل فنڈز ایسوسی ایشن آف پاکستان (MUFAP)کی ممبر ہے۔
ایم سی بی عارف حبیب نے مارکیٹ میں نئے آئیڈیاز اور تحلیقی، رجحان کی حامل پروڈکٹس پیش کیں، نئے عالمی معیار قائم کئے اور ایسٹ مینجمنٹ میں قائدانہ مقام حاصل کیا۔

  • پروائیویٹ سیکٹر کی دیگر ایسیٹ مینجمنٹ کمپنیوں کے مقابلے میں کسٹمرز کی ایک سے زیادہ تعداد۔
  • PACRAکی جانب سے ایک سے زیادہ ایسیٹ مینیجرریٹنگ AM2++کا اعزاز۔
  • ایم سی بی پاکستان ایسٹ ایلوکیشن فنڈ(MCB-PAAF)کیلئے PACRAکی طرف سے 30جون 2012تک کے ریٹرنز کی بنیاد پر غیر معمولی کارکردگی کے اعتراف میں 1سال کیلئے 5اسٹار رینکنگ۔
  • تھامسن ریوٹرز لپر کی جانب سے ہمارے ایکویٹی فنڈ، پاکستان اِسٹاک مارکیٹ فند کی 2012کے پہلے 100ٹاپ ایکویٹی فنڈز میں شمولیت۔
  • مارچ 2002میں، میوچل فنڈ انڈسٹری کے پہلے انکم فنڈ، ایم سی بی پاکستان انکن فنڈ کا آغاز۔
  • مارچ 2002میں ملک کے پہلے پرائیویٹ سیکٹر ایکویٹی فنڈ، ایم سی بی پاکستان اسٹاک مارکیٹ فنڈ کا آغاز جس نے اپریل 2013تک 192%لفا (کے ایس ای 100سے زائد ) کی حد کو چھولیا۔
  • ایم سی بی پاکستان کیش مینجمنٹ فنڈ AAA(F)مستحکم ریٹنگ حاصل کرنے والا ملک کا پہلا منی مارکیٹ فنڈ بنا۔
  • 2003میں انڈسٹری کے پہلے سو ورِن رِسک انکم فنڈ، ایم سی بی پاکستان سو ورن فنڈ کا آغاز ۔
  • پاکستان پریمئر فنڈ (جو اُس وقت کلوز اینڈ فنڈ تھا) کو بھی 2005اور 2006میں کے ایس ای ٹاپ 25کمپنیز میں شامل کیا گیا۔
  • پاکستان انکم انہانسمنٹ فنڈ نے مالی سال 2009میں اب تک کا سب سے زیادہ 18.33سالانہ ریٹرن (معمول کے مطابق ریٹرن کی نقصان کی واپسی بغیر) حاصل کرکے فکسڈ انکم فنڈز کیٹگری(جس کا آغاز 2008میں ہوا) کی ایک نئی تاریخ رقم کی۔
  • الحمرا اسلامک ایسیٹ ایلوکیشن فنڈ (سابقہ پاکستان انٹرنیشنل ایلیمنٹ اسلامک ایسیٹ ایلوکیشن فنڈ) یہ ملک کا پہلا میوچل فنڈ تھا۔ جسے اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے سمندر پار مارکیٹوں میں سرمایہ کاری کی اجازت دی۔
  • ایم سی بی عارف حبیب پاکستان کی پہلی ایسیٹ مینجمنٹ کمپنی ہے جس نے اپنے ریٹیل کلائنٹس کو اے ٹی ایک کارڈ سے رقم نکوانے کی سہولت دی۔
  • ایم سی بی عارف حبیب وہ پہلی ایسیٹ مینجمنٹ کمپنی ہے جس نے اپنے انویسٹرز کے بہترین مفاد میں کلوز ڈ اینڈ فنڈ (پاکستان کیپٹل مارکیٹ فنڈ) کو 2006میں اوپن اینڈ فنڈ میں تبدیل کیا۔
ریٹنگز:
PACRAکی جانب سے ایسیٹ مینجر ریٹنگ

مینجمنٹ کمپنی AM2++
AM2++ایسیٹ مینجر، انویسٹمنٹ مینجمنٹ انڈسٹری کے اعلیٰ ترین معیار اور ریٹنگ فیکٹرز کے بنچ مارک میں نمایاں استعداد کے حامل ہوتے ہیں۔
تاریخ: 8 اکتوبر2018؁

PACRAکی جانب سے اینٹیٹی ریٹنگ
‘AA-‘(طویل المعیاد ) A1+(قلیل المعیاد)
تاریخ: 28 دسمبر 2017؁